ایک میاں بیوی کو شادی کے کئ سال بعد بھی کوئی اولاد نہیں ھوئی اس لیۓ اپنی تنہائی کو دور کرنے او وقت گزاری کے لئے دونوں نے ایک کتا پالا کچھ ھی عرصے میں دونوں کا کتے سے کافی جذباتی لگاؤ ھوگیا وقت گزرتا گیا اور 7 سال بعد دونوں کو اللہ نے ایک بیٹا دیا گھر میں چاند سا بیٹا آنے کے بعد دونو کی توجہ کتے کی طرف قدرے کم ھوگئی ایک دن اپنے بیٹے کو گھر میں سوتاھوا چھوڑ کے دونوں حویلی کے باغ میں ٹہلنے کیلئے گئے باتوں باتوں میں وقت کا

ایک میاں بیوی کو شادی کے کئ سال بعد بھی کوئی اولاد نہیں ھوئی اس لیۓ اپنی تنہائی کو دور کرنے او وقت گزاری کے لئے دونوں نے ایک کتا پالا کچھ ھی عرصے میں دونوں کا کتے سے کافی جذباتی لگاؤ ھوگیا وقت گزرتا گیا۔جاری ہے۔

اور 7 سال بعد دونوں کو اللہ نے ایک بیٹا دیا گھر میں چاند سا بیٹا آنے کے بعد دونو کی توجہ کتے کی طرف قدرے کم ھوگئی ایک دن اپنے بیٹے کو گھر میں سوتاھوا چھوڑ کے دونوں حویلی کے باغ میں ٹہلنے کیلئے گئے باتوں باتوں میں وقت کا احساس ہی نہیں ھوا جب گھر کی طرف لوٹے تو کتا گھر کی دہلیز پر کھڑا تھا اور منہ اور چہرہ خون آلود تھا کتے کی حالت دیکھ کے بچے کا باپ انتہائی غصے کی حالت میں گئے۔جاری ہے۔

او اپنا بندوق اٹھا کر کتے کو وھی ڈھیر کردیا اور پھر تیزی سے اس کمرے کی طرف بھاگے جس میں بچہ سورھا تھا وہاں دیکھا تو ایک بہت بڑا سانپ سر کٹا ھوا پڑا تھا جو اسی کتے نے بچے کی حفاظت کرتے ھوۓ مارا تھااس سارے واقعے سے ھمیں یہ سبق ملتا ھیں کہ جذبات اور جلدبازی میں کئے گئے اکثر فیصلے غلط ثابت ھوتے ھیں…

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓↓۔

کیٹاگری میں : kahani

اپنا تبصرہ بھیجیں