نوجوان لڑکی کی سوشل میڈیا پر لڑکے کیساتھ دوستی محبت میں بدل گئی کالج گئی لیکن واپس نہ آئی تو اہلخانہ نے پولیس کو اطلاع کردی تحقیقات کے دوران ایسا انکشاف کہ آئندہ کسی غیر لڑکے کی ریکوئسٹ دیکھ کر لڑکیاں تھر تھر کانپنا شروع ہوجائیں گی کیونکہ

راولپنڈی پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے لڑکیون کو اغوا کرنے اور غیر اخلاقی ویڈیوز بنانے میں ملوث گینگ کے تین افراد کو گرفتار کرکے فیصل آباد میں چھاپہ مار کر مغوی طالبہ کو بازیاب کرلیا۔۔۔۔جاری ہے۔

loading...

تفصیلات کے مطابق ایس ایچ او تھانہ مورگاہ کے مطابق مسماة (م) عمر 17 سال مورگاہ کے ایک سرکاری کالج میں ایف اے کی طالبہ تھی، جس کا سوشل میڈیا پر جمنی کے نوجوان سے رابطہ ہوا اور دوستی کے بعد شادی کی خواہشمند تھی۔ تین دن قبل یہ اپنے کالج گئی لیکن گھر واپس نہ آئی جس پر والدین نے پولیس کو آگاہ کیا، اس دوران اس کے گھر والوں کو ایک ٹیلی فون کال بھی موصول ہوئی۔۔۔۔جاری ہے۔


پولیس نے کالج سے نکلنے کی فوٹیج حاصل کی اور کال کے نمبر پر تفتیش شروع کی جس کے بعد گزشتہ روز فیصل آباد کے علاقے میں چھاپہ مار کر لڑکی کو بازیاب کرلیا گیا۔۔۔۔جاری ہے۔

اسے جرمنی میں مقیم شخص کے تین کزن اور دوستوں عادل، وسیماور فیصل نے اغوا کیا تھا۔ ملزم شادی کرکے قابل اعتراض ویڈیو بنا کر لڑکی اور اہل خانہ کو بلیک میل کرتے تھے۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول کریں ۔↓↓↓۔

کیٹاگری میں : kahani

اپنا تبصرہ بھیجیں